Featured Post

Something else

No its not writer's block Its something else Just wondering why am I not writing much these days!

Tuesday, June 30, 2015

دھند 20

فون مستقل بج رہا تھا ، لالہ اس کا فون اٹھاے ٹیریس پر اے 
اس کا دل  دھرکا 
یہ بے وقت فون؟ ، کہیں ہسپتال سے نہ ہو 
یوں بھی کئی گھنٹوں سے اسے بے چینی نے گھیرا ہوا تھا 

 نرس نے اسے بتایا کہ زیبی گل کو انتہائی سیریس حالت میں  ہسپتال لایا  گیا ہے  اور زینیا شاہ کو فورن ہسپتال پہنچنا چاہیے 

 صرف ایک لمحے کو اس  کے ہاتھ کانپے تھے ، پھر اس کی پروفیشنل طبعیت تیزی سے  فعال  ہوئی تھی 
اس نے تکنیشین کو فون   کر کے آپریشن تھیٹر تیار کرنے کو کہا ، ساتھ ہی انستھٹسٹ اور اپنے سینئر سرجن کو ہسپتال پہنچنے کی درخواست کی 
اس دوران لالہ  اس کی ہدایت پر گاڑی  نکل چکے تھے ، وہ جلدی سے دوڑتی ہوئی گاڑی میں سوار ہوئی اور گاڑی  ہسپتال کی جانب روانہ ہوئی 

زیبی  گل زینیا شاہ کے لیے صرف ایک مریضہ نہیں تھی . وہ اس کے لیے اس معاشرے میں ہونے والی نہ انصافیوں کے خلاف آواز  تھی ، وہ اس کے لیے  امید کی ایک کرن تھی جسے وہ کسی قیمت پر بجھنے نہیں دینا چاہتی تھی. مگر اب ایسا محسوس ہو رہا تھا کہ  اس کرن کی لو ٹمٹما  رہی ہے 
ان جانے میں ہی زینیا کی آنکھوں میں دھند اتر آئی ، آنسوؤں کی دھند. ویسے ہی اس کا دل بے قرار تھا اور اب شاید زیبی گل  کو بچانے کے لیے یہ اس کے پاس اک آخری موقع تھا 

اس نے ہسپتال میں داخل ہوتے ہی آپریشن تھیٹر کی جانب دوڑ لگائی ، جہاں اس کے ساتھ پہلے ہی پہنچ چکے تھے ، زیبی گل کو بھی اندر پہنچا دیا گیا تھا 
اس نے لباس تبدیل کیا ، سر پر ٹوپی پہن کر سرے بالوں کو اس میں چھپایا ، چہرے پر ماسک باندھا  اور سکرب  کرنے لگی 
اس کے ہاتھ کانپ رہے تھے ،  کانپتے ہاتھوں سے سکرب کرتے ہوے وہ الله سے مستقل دعا  مانگتی رہی کہ وہ اس کی ایک بندی کی زندگی بچا سکے 
گلوز  پہن کر وہ تھیٹر کے اس حصّے میں چلی آئی جہاں آپریشن ٹیبل پر ذہبی گل دراز تھی 
ہیڈ لائٹس میں نہایا ہوا اس کا وجود پیلا پڑا ہوا تھا 
زینیا نی اسے پکارا تو وہ اس کی آواز پہچان کر اس کی جانب مڑی 
کتنا ذلیل کرواتی ہی یہ محبّت ، زینیا کو شدید افسوس ہوا، اپنے شوہر کی نام نہاد محبّت میں وہ جان دینے چلی تھی 
اس نے انستھٹسٹ سے اس کی صورت حال کے بارے میں پوچھا ، سرجن مظہر اور انستھتیسٹس  ڈاکٹر اسد دونوں کو شدید تشویش تھی 

اور اتنا تو وہ بھی سمجھ گئے تھے کہ ڈاکٹر زینیا شاہ بہت پریشان ہی کیوں کہ آج سے پہلے انہیں نی اس کی آنکھوں میں آنسو نہیں دیکھے تھے 

مگر وقت نہیں تھا اور کوئی دو فیصلے بھی نہیں لئے جا سکتے تھے ، انہیں سرجری کرنا تھی  مگر سب سے بری دقّت یہ تھی کہ متبادل خون کا بندوبست نہیں ہو پا رہا تھا ، گلیات میں کہیں بلڈ بینک نہیں تھا اور زیبی گل کے گھر کے مرد خون دینے پر رضا مند نہیں تھے 

ڈاکٹر  زینیا شاہ اور سرجن  مظہر نے بسماللہ پڑھ کر سرجری کا آغاز کیا 

ابھی زیادہ دیر نہیں گزری  تھی کہ ڈاکٹر اسد نے  بتایا کے زیبی گل کے وائی ٹلز  گر رہے ہیں ، اس کی سانس اکھڑ  رہی تھی 
بی پی بہت نیچے جا چکا تھا ، دوسری جانب وہ لوگ بہتے ہوے خون کو روکنے میں ناکام ہو رہے تھے ، خون کی ایک بھی بوتل موجود ہوتی تو اس کی جان بچائی  جا سکتی تھی 

ڈاکٹر  اسد نے  زیبی گل کو انٹو بیٹ کر دیا تھا 

یہ آخری طریقہ تھا اس کی سانس بحال کرنے کا  کیوں کہ اس  دور افتادہ سرکاری ہسپتال میں وینٹی لیٹر نہیں تھا 

اسے مصنوئی سانس دی جا رہی تھی 

زینیا شاہ ساکن کھڑی اسے زندگی سے دور جاتا دیکھ رہی تھی 

اس کے بس میں اب کچھ نہیں تھا 

اس کی آنکھوں سے آنسو بہ رہے تھے 

سرجن مظہر  نے قریب آ کر اسے تسّلی دی،

ہم یہی کر سکتے تھے زینیا. تم یہی کر سکتی تھیں. "
وہ انگریزی میں گویا ہوے 

مگر وہ نفی میں سر ہلا کر ان کا انکار کرتی رہی 

وہ بہت کچھ کر سکتی تھی ، اگر اسے خون کی ایک بوتل مل جاتی ، اگر اس دور افتادہ ہسپتال میں وینٹیلیٹر موجود ہوتا 

زیبی گل زندگی کی جنگ ہار  رہی تھی 
اس کی سانسیں اب امبو بیگ سے بھی بحال نہیں ہو رہی تھیں 

ڈاکٹر  اسد نے سی پی آر  دینے کا فیصلہ لیا 

مگر  زینیا شاہ جانتی تھی  فیصلہ تو ہو چکا تھا 

اس نے زیبی گل کی آنکھوں میں اترتی  دھند دیکھ لی تھی 

موت کے وقت آنکھوں میں چھا جانے والی دھند

. جس کے بعد زندگی کے ڈرامے کا آخری پردہ گرتا ہے اور منظر ہمیشہ کے لیے تبدیل ہو جاتا ہے 

منظر تبدیل ہو گیا تھا ، زیبی گل کا خوبصورت وجود .سرد  بے جان  مجسسمے میں تبدیل ہو چکا تھا 

ڈاکٹر زینیا شاہ کی آنکھوں سے دو آنسو نکل کرزیبی   گل  کے ٹھنڈے وجود میں جذب ہو گئے تھے
=====================================================================


Monday, June 29, 2015

Clue

The rainbow that I painted
reflected the shades of grey
The lipstick that was pink
painted my lips purple
The dress I was clad in
suddenly appeared blue
The leaf that was fallen
gave an orange hue
The colors of my life
manifest a major clue.

craziness

In the semi conscious state between sleepiness and wakefulness
I often think of you

Saturday, June 27, 2015

For old time's sake

Staying up alone
in the late hours
of a solitary night
is worthless
only if, it is for
old time's sake.

Friday, June 26, 2015

Re-visiting

Sometimes it feels so nice to revisit olden times
Re-reading
Re-imagining
Re-feeling
Sometimes its worthwhile to go back in times.

Thursday, June 25, 2015

Random readings

Sometimes you go through words which bring back memories. I wish I didn't read them tonight.

It brought back so much, I am not supposed to remember.


https://www.facebook.com/WelcomeHomeOriginal/photos/a.392785137448108.88435.392782620781693/902485673144716/?type=1&theater

Happiness

Sometimes I wonder where does true happiness lie? How distant and how hidden? Lost where and found where?
And then after being at a loss of running after "true" happiness , I sought the fake ones. Always thinking they were easy to find. Fake smiles, fake gestures, fake appreciations, fake remarks, fake relations.
Yes they were easily found but less sustaining. They were like unpredictable storms, which come and go sometimes without leaving their marks. Ending only in turmoil.

Then came the conflict of thankfulness. So may be I was being ungrateful, Ungrateful for having who and what I already had. Practicing being modest was no big deal , as it was my second self, To people, to fellows, to family, to relatives, to even servants, I was thankful to the core but that neither brought me happiness nor satisfaction.

Expectations? does it mean that I expect a bit too much from people around and when they can not come up to expectation, I am unhappy. May be I was giving too much and expecting the same in return, so I tried being extra nice , giving only-receiving nothing person, But then being human was such a bigger fault, I still expected a slight bit in return, slightest of attention, bits of appreciation, minor care, and fragments of love. Too much to ask for?

Looking? was looking enough? looking for happiness is never enough, that's what I learnt in this life. Its looking along with strong desire to find it, The stronger the desire, the closer it will get through, May be in life, only for a short span of time we may have a chance to hold on to real happiness, the one that brightens your skin, energize your body and equally quenches your soul.

Most of the time we do not realize, only after they slipped by, that those were moments of holy happiness. but later in life, somewhere on the rough road of a long track, even their memories help to derive peace. But many of us are even not that fortunate.

I feel happiness is not a secluded feeling, it is linked with gratitude, not expecting much, desires and soul searching. Altogether.

And thus it remains a rare thing to find.


Sunday, June 21, 2015

Heat wave

Yes I would love to die in a fasting state in Ramzan
but not due to heat!
If this heat wave persists for a few more days I may give in.

Friday, June 19, 2015

Holy month

So amongst a rush this Holy month began
And for a moment when I stop to feel its beginning
I find solace and memories inside me

Sunday, June 14, 2015

In_futile

With You gone
I sought refuge
in the canopy of books
in the shelter of words
in the arms of fragrance
in the warmth of nights
in the charms of dreams
All in_futile attempts
for nothing could replace
your warmth, fragrance or charms
your words, nights or arms.

Thursday, June 11, 2015

For MHT (in his critical times)

You had a fear of something eventful happening to your health status. Many times you told me and I tried to deny your fear as many times.
At times our fears stand in front of us like horrifying mountains but I am sure you will climb this too like you did so many before.
You will come back to us cheerfully.
There are many who are waiting for your return.
Don't keep us awaiting so long.

Tuesday, June 9, 2015

Never

How a name which was a name alone
evolves and transforms into a bond
where existence preferred and
and abstinence feared
how time travels to bring closer
the two who were none
but strangers
how sleep staggers and
dreams shattered
and never let them
be together

Monday, June 8, 2015

Friday, June 5, 2015

nothingness

And then comes a time when we lose the track of time and space and keep afloating into nothingness.

Wednesday, June 3, 2015

Sandstorm

Bringing the taste of sand to my lips
and the dry burning to my eyes
along with the waves of cold winds
the sand storm this evening 
felt like the moment, we parted.

Your name

Your name is nothing but
A three letter word
And in this summer heat when
Everything is melting away
Your name remains.

sacred night

Sacred nights bring so much
They also bring along memories. 

Tuesday, June 2, 2015

Melting

In this scorching heat of 46 degrees Celsius I am melting like a margarine bar on stove!